More share buttons
اپنے دوستوں کے ساتھ اشتراک کریں

پیغام بھیجیں
icon تابی لیکس
Latest news
سری لنکا سیریز، سرفراز کپتان اور بابر اعظم نائب کپتان مقرر ترجمان پی سی بی - ہم نے سری لنکا کرکٹ کا بیان دیکھا ہے ہمارے ساتھ سری لنکا کرکٹ ٹیم کی حفاظت سے متعلق انٹیلیجنس رپورٹ یا کسی بھی معلومات کا تبادلہ نہیں کیا گیا پی سی بی سری لنکا کرکٹ ٹیم کی مکمل حفاظت اور سیکورٹی کے عزم کو دہراتا ہے پی سی بی اس سلسلے میں سری لنکا کرکٹ کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا حیران ہوں کہ مصباح کو ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کے ساتھ چیئرمین پی سی بی نہیں بنایا گیا۔ شعیب اختر ٹیسٹ کرکٹر فیصل اقبال پی سی بی میں کوئی بھی عہدہ نہ ملنے پر سیخ پا مصباح الحق پاکستان کے سب سے مہنگے کوچ, ماہانہ 28 لاکھ افغان کپتان راشد خان دنیا کے کم عمر ترین ٹیسٹ کپتان بن گئے نئی ذمہ داریاں سنبھالنے پر ڈین جونز کی مصباح اور وقار یونس کو مبارکباد مصباح الحق قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ، وقار یونس بولنگ کوچ مقرر پی سی بی/گورننگ بورڈ اجلاس لاہور:پی سی بی گورننگ بورڈ کا اجلاس نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں شروع ہوگیا لاہور:اجلاس کی صدارت چیرمین پی سی بی کریں گے لاہور:اجلاس میں بجٹ کی منظوری لی جائے گی لاہور:میٹنگ میں چیرمین پی سی بی اپنی رپورٹ پیش کریں گے لاہور:اجلاس میں آڈٹ کمیٹی اپنی رپورٹ پیش کرے گی قومی کرکٹ ٹیم کے لئے کوچ کی تلاش باؤلنگ کوچ کے عہدے کے لئے وقار یونس مضبوط امیدوار بن گئے۔ذرائع باولنگ کوچ کے عہدے کے امیدوار محمد اکرم نے اپنی درخواست واپس لے لی سابق ٹیسٹ کرکٹر جلال الدین بھی انٹرویو کے لئے کوچ فائنڈنگ کمیٹی کے سامنے انٹرویو کے لئے پیش نہیں ہورہے ۔ذرائع ہیڈ کوچ کے امیدوار ڈین جونز کا ویڈیو لنک پر انٹرویو ہو گیا ۔ذرائع ڈین جونز نے کمیٹی کو اپنے پلان سے بھی آگاہ کیا ۔ذرائع

مکی آرتھر اپنی آئی پہ آ گئے، سینیئر کھلاڑیوں کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ جاری

مکی آرتھر اپنی آئی پہ آ گئے، سینیئر کھلاڑیوں کو نظر انداز کرنے کا سلسلہ جاری

اگر مکی آرتھر کے پورے کوچنگ کیریئر پہ نظر دوڑائیں تو معلوم پڑتا ہے کہ ان کے اندر کوئی ضدی اور حاسد بچہ چھپا بیٹھا ہے جس کو بڑوں سے سخت نفرت ہے، ان کی اسی بچگانہ روش پہ ان کو آسٹریلین کرکٹ بورڈ نے چلتا کیا تھا، مگر پاکستان میں ان کی عادت کو خوب پزیرائی ملی کیونکہ پی سی بی  سینیئر کھلاڑیوں کو زلیل کرکے ٹیم سے باہر کرنے کی روایت اتنی ہی پرانی ہے جتنا پاکستان کرکٹ بورڈ پرانا ہے

ٹیم منیجمنٹ اس انتظار میں ہوتی ہے کہ کب سینیئر کھلاڑی فٹ یا دستیاب ہو اور اسے ٹیم میں شامل کیا جائے مگر انگلینڈ میں جیت کے انتظار میں پاکستانی ٹیم کے ہیڈکوچ شکستوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے اپنی ضدی عادت سے مجبور ہیں ،،، شعیب ملک کے تیسرے ون ڈے میں شرکت یقینی سمجھی جا رہی تھی مگر ہمارے ذرائع بتا رہے ہیں ٹیم منیجمنٹ چاہتی ہے کہ وہ اپنے لاڈلوں کو اچھی طرح آزما لے پھر بڑوں کو بھی دیکھ لیا جائے گا

کچھ اسی صورت حال کا سامنا سابق کپتان محمد حفیظ کو ہے کہ جنہوں نے اپنی دستیابی تو ظاہر کردی ہے مگر ذرائع کے مطابق مکی آرتھر فی الحال ان کو بھی چانس دینے کے موڈ میں نہیں ہیں اور یہ بات یقینی ہے کہ تیسرے ون ڈے میں بھی محمد حفیظ ٹیم کا حصہ نہیں بن سکیں گے

adds

اپنی رائے کا اظہار کریں