More share buttons
اپنے دوستوں کے ساتھ اشتراک کریں

پیغام بھیجیں
icon تابی لیکس
Latest news
ٹکرز گڈ لک پیغامات۔ جہانگیرخان اور دیگر نامور کھلاڑیوں کا پاکستان کرکٹ ٹیم کے لیے نیک خواہشات کا اظہار۔ پوری قوم کو امید ہے کہ ٹیم ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں ہمیں اچھی خبرسنائے گی۔ جہانگیرخان۔ کسی بھی کھلاڑی کے لیے بہترین موقع ہوتا ہے کہ وہ اپنی محنت اور ٹریننگ کو بہترین کارکردگی میں تبدیل کردے ۔ جہانگیرخان۔ ہم سب اس بات کے منتظر ہیں کہ پاکستان دوبارہ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ چیمپئن بنے گا ۔ اصلاح الدین۔ کھلاڑیوں کو چاہیے کہ وہ ہر میچ کو دل لگاکر کھیلیں ۔ سمیع اللہ۔ امید ہے کہ پاکستان ٹیم ہمیں فخر کرنے کا موقع فراہم کرے گی۔ اعصام الحق۔ ٹیم بہترین پرفارمنس دے گی تو جیت بھی اسی کی ہوگی۔ ارشد ندیم۔ ہماری امیدیں ٹیم کے ساتھ وابستہ ہیں ، یہ ٹیم ضرور کامیابی حاصل کرے گی۔ شہروز کاشف۔ کھلاڑی خود پر مکمل یقین رکھتے ہوئے بہترین پرفارمنس دینے کی کوشش کریں۔ ہاجرہ خان۔ یہ ٹیم غیرمعمولی صلاحیتوں کے حامل کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور بہترین نتائج دے سکتی ہے۔ عارف خان۔ اپ ڈیٹ پاکستان کرکٹ ٹیم۔ ڈلاس۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کا آج ریسٹ ڈے ہے۔ پاکستان ٹیم کل شام چار بجے سے سات بجے تک پریکٹس سیشن کرے گی پاکستان ٹیم کا ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں پہلا میچ امریکہ کے خلاف چھ جون کو ہوگا ٹکرز ۔ بابراعظم ۔پوڈکاسٹ ۔ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ جیت کر قوم کو خوشیاں دینا چاہتا ہوں ۔ بابراعظم۔ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ جیتنا ہے تو ایک ہوکر کھیلنا ہوگا اور ہر ٹیم کو ہرانا ہوگا۔ بابراعظم۔ امریکہ میں کھیلنا ایک مختلف تجربہ ہوگا ۔ یہ ایک چیلنج ہوگا۔ بابراعظم۔ صرف انڈیا کا میچ نہیں بلکہ تمام میچ ہمارے لیے اہمیت رکھتے ہیں۔ بابراعظم۔ افسوس ہے کہ پچھلے دو ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں بہت قریب آکر نہ جیت پائے ۔ بابراعظم۔ بحیثیت کپتان آئی سی سی ایونٹ نہ جیتنے کا افسوس ہے ، اس بار جیتنا ہے۔ بابراعظم۔ اپنے ذاتی ریکارڈ کے لیے نہیں کھیلتا ، اولین ترجیح پاکستان ٹیم ہے۔ بابراعظم۔ فینز پاکستان ٹیم کو سپورٹ کریں یہ ہم سب کی ٹیم ہے۔ بابراعظم۔ اپنے اسٹرائیک ریٹ کو بہتر کرنے پر کافی کام کیا ہے۔ بابراعظم۔ ٹیم کی سچوئیشن کے حساب سے بیٹنگ کرتا ہوں۔میرا بیٹنگ اسٹائل ایسا نہیں کہ جاتے ہی چھکے مارنا شروع کردوں۔ بابراعظم۔ ٹیم کا ماحول بہت اچھا ہے۔ سب کا مقصد ایک ہے ورلڈ کپ جیتنا۔ بابراعظم۔ ٹکرز ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کا ترانہ ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کا ترانہ ´ساڈی واری اوئے ´ جاری کردیا گیا۔ یہ ترانہ علی عظمت۔ عارف لوہار اور نہال نسیم نے گایا ہے۔ یہ ترانہ پاکستانی شائقین کے جذبے کو خراج تحسین ہے جو ہر وقت پاکستان ٹیم کے ساتھ کھڑے ہیں۔ پاکستانی شائقین اپنی ٹیم کو کامیابی سے ہمکنار ہوتا دیکھنا چاہتے ہیں تاکہ وہ بھی اس جیت کا جشن منائیں۔ لندن۔ چئیرمین پاکستان کرکٹ بورڈ محسن نقوی کی انگلینڈ و ویلز کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رچرڈ تھامسن و چیف ایگزیکٹو آفیسر رچرڈ گولڈ سے ملاقات حالیہ پاکستان انگلینڈ ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سیریز اور ائندہ ہونے والی کرکٹ سیریز پر تبادلہ خیال اکتوبر میں پاکستان میں پاک انگلینڈ ٹیسٹ کرکٹ سیریز پر بھی بات چیت چئیرمین پی سی بی محسن نقوی نے چئیرمین انگلینڈ و ویلز کرکٹ بورڈ رچرڈ تھامسن کو پاک انگلینڈ سیریز پر دورہ پاکستان کی دعوت دی محسن نقوی نے ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سیریز میں بہترین انتظامات پر چئیرمین انگلینڈ و ویلز کرکٹ بورڈ کا شکریہ ادا کیا ملاقات میں ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی تیاریوں کے حوالے سے بھی گفتگو دونوں چئیرمینز کا ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لئے ایک دوسرے کے لئے نیک خواہشات کا اظہار محسن نقوی نے آئندہ برس پاکستان میں چیمپئنز ٹرافی کے انعقاد کے انتظامات سے آگاہ کیا چیمپئنز ٹرافی کرکٹ ٹورنامنٹ کے لئے سٹیڈیمز کی اپ گریڈیشن کے کام کا آغاز کر دیا ہے۔ محسن نقوی پاکستان میں کرکٹ ٹیموں کے لئے ہر لحاظ سے فول پروف انتظامات کئے جائیں گے۔ محسن نقوی کرکٹ کھیل کے ساتھ دلوں کو جوڑتا ہے۔ محسن نقوی چئیرمین انگلینڈ و ویلز کرکٹ بورڈ کا چیمپئنز ٹرافی کے حوالے سے پی سی بی کے لئے نیک تمناؤں کا اظہار چیف آپریٹنگ آفیسر پی سی بی سلمان نصیر بھی موجود تھے اپ ڈیٹ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم برطانیہ کا دورہ مکمل کرکے لندن سے ڈیلاس امریکہ کے لیے روانہ ہوگی۔ پاکستان کرکٹ ٹیم نے برطانیہ کے دورے میں آئرلینڈ اور انگلینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز کھیلی۔ پاکستان کرکٹ ٹیم آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں اپنا پہلا میچ 6 جون کو امریکہ کے خلاف ڈلاس میں کھیلے گی۔ پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم کا ٹریننگ سیشن پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم بارش کے باعث آج کاؤنٹی گراؤنڈ، چیمسفرڈ کے انڈور ایریا میں ٹریننگ سیشن میں حصہ لے رہی ہے۔ پاکستان اور انگلینڈ کی خواتین کرکٹ ٹیموں کے درمیان تین ون ڈے انٹرنیشنل میچوں کی سیریز کا آخری میچ کل کھیلا جائے گا۔ میچ مقامی وقت کے مطابق دوپہر ایک بجے کھیلا جائے گا۔ میزبان ٹیم کو سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔ پاکستان ویمنز کرکٹ ٹیم ٹاؤنٹن سے چیمسفرڈ پہنچ گئی۔ پاکستان ویمنز ٹیم کل مقامی وقت کے مطابق دوپہر دو بجے سے شام پانچ بجے تک کاؤنٹی گراؤنڈ چیمسفرڈ میں ٹریننگ سیشن میں حصہ لے گی۔ پاکستان اور انگلینڈ کی خواتین کرکٹ ٹیموں کے درمیان تین ون ڈے انٹرنیشنل میچوں کی سیریز کا تیسرا اور آخری میچ بدھ کو مقامی وقت کے مطابق دوپہر ایک بجے کھیلا جائے گا۔ انگلینڈ کو تین ون ڈے انٹرنیشنل میچوں کی سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل ہے۔ دونوں ٹیموں کے درمیان دوسرا ون ڈے انٹرنیشنل میچ بارش کی وجہ سے بے نتیجہ رہا تھا ۔ پیرس اولمپکس میں شرکت کا پاکستانی باکسرز کا خواب چکنا چور ہوگیا، کوالیفائنگ کے دوسرے راؤنڈ میں شرکت کرنے والے محمد فہیم اور جہانزیب رضوان شکست کھا کر ایونٹ سے آؤٹ ہوگئے فخر زمان 2 سے 3 اوورز مزید بیٹنگ کرلیتے تو میچ کا نتیجہ مختلف ہوتا: بابر اعظم

اپنے اندر چھپے چالی چپلن کو باہر آنے سے مت روکیں

اپنے اندر چھپے چالی چپلن کو باہر آنے سے مت روکیں
آفتاب تابی
آفتاب تابی

انسانی اظہار کے دائرے میں، ایک آفاقی سچائی موجود ہے: ہر ایک کے اندر ایک چارلی چپلن چھپا ہوا ہے۔ ہم اپنی روزمرہ کی زندگی میں جن سنجیدہ چہروں کو پہنتے ہیں، ان کے علاوہ مزاحیہ صلاحیتوں کا ایک ذخیرہ موجود ہے جس کو استعمال کرنے کے منتظر ہیں۔ چیپلن کے مشہور کردار، ٹرامپ کی لازوال اپیل ہماری زندگیوں پر مزاح کے گہرے اثرات کی یاد دہانی کے طور پر کام کرتی ہے۔

چارلی چپلن، اپنی الگ مونچھوں، باؤلر ٹوپی اور چھڑی کے ساتھ، اپنی جسمانی مزاح اور پُرجوش سماجی تبصرے کے منفرد امتزاج سے سنیما کی دنیا میں انقلاب برپا کر دیا۔ پھر بھی، جس چیز نے چیپلن کو واقعی قابل ذکر بنایا وہ اس کی گہری انسانی سطح پر سامعین کے ساتھ جڑنے کی صلاحیت تھی۔ مصیبت کی دنیا میں گھومتے ہوئے انڈر ڈاگ کی اپنی تصویروں کے ذریعے، چپلن نے بے مثال فضل اور حساسیت کے ساتھ انسانی حالت کے جوہر کو اپنی گرفت میں لیا۔

لیکن ہم میں سے ہر ایک کے اندر چھپے ہوئے چارلی چپلن کا کیا مطلب ہے؟ یہ مزاح اور لچک کی موروثی صلاحیت سے بات کرتا ہے جو ہر فرد کے اندر رہتی ہے۔ جس طرح چیپلن نے کامیڈی کو اپنے اظہار اور سماجی تنقید کے لیے ایک آلے کے طور پر استعمال کیا، اسی طرح ہم بھی ہنسی کی طاقت سے زندگی کے چیلنجوں کو فضل اور عاجزی کے ساتھ نیویگیٹ کر سکتے ہیں۔

ہمارے اندرونی چارلی چپلن کو گلے لگانے کے لیے زندگی کی بیہودگی کو قبول کرنے اور دنیا میں مزاح تلاش کرنے کی خواہش کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ ہم اپنی روک تھام کو چھوڑ دیں اور خود کو کمزور ہونے دیں، یہ جانتے ہوئے کہ ہنسی خوشی اور غم کے وقت ہمیں ٹھیک کرنے اور متحد کرنے کی قابل ذکر صلاحیت رکھتی ہے۔

غیر یقینی صورتحال اور ہنگامہ آرائی سے بھری دنیا میں، مزاح کا احساس پیدا کرنا صرف ایک عیش و آرام کی چیز نہیں ہے، بلکہ بقا کے لیے ایک ضرورت بن جاتی ہے۔ جیسا کہ چیپلن نے خود ایک بار کہا تھا، “ہنسی کے بغیر ایک دن ضائع ہونے والا دن ہے۔” درحقیقت، ہنسی اندھیرے کے درمیان امید کی کرن کا کام کرتی ہے، جو ہمیں ہماری مشترکہ انسانیت اور انسانی روح کی لچک کی یاد دلاتی ہے۔

تو ہم اپنے اندر کے چارلی چیپلن کو کیسے اتار سکتے ہیں اور اندر ہی اندر مزاحیہ ذہین کو گلے لگا سکتے ہیں؟ یہ زندگی کو مزاح اور عاجزی کی عینک سے دیکھنے کی خواہش سے شروع ہوتا ہے۔ خواہ مضحکہ خیز تبصرے کے ذریعے، ایک چنچل اشارے سے، یا دل بھری ہنسی کے ذریعے، ہم جہاں بھی جائیں خوشی اور مثبتیت پھیلانے کی طاقت رکھتے ہیں۔

مزید برآں، ہم چپلن کے خود کی دریافت اور فنکارانہ اظہار کے اپنے سفر سے متاثر ہو سکتے ہیں۔ اپنے ہنر کا احترام کرتے ہوئے اور اپنی مستند خودی کے ساتھ سچے رہنے سے، ہم اپنی تخلیقی صلاحیتوں کو بروئے کار لا سکتے ہیں اور اپنی مزاحیہ صلاحیتوں کی پوری رینج کو سامنے لا سکتے ہیں۔

آخر میں، ہمارے اندرونی چارلی چپلن کو گلے لگانا صرف لوگوں کو ہنسانے کے بارے میں نہیں ہے، بلکہ گہرے روابط قائم کرنے اور انسان ہونے کے مشترکہ تجربے میں معنی تلاش کرنے کے بارے میں ہے۔ تو آئیے ہم اپنی خیالی باؤلر ٹوپیاں پہنیں، اپنی استعاراتی چھڑی اٹھائیں، اور خود دریافت اور ہنسی کے سفر کا آغاز کریں جس سے چپلن کو فخر ہو۔ سب کے بعد، جیسا کہ انہوں نے ایک بار مشہور کہا تھا، “Life is a tragedy when seen in close-up, but a comedy in long-shot.”.”

adds

اپنی رائے کا اظہار کریں