More share buttons
اپنے دوستوں کے ساتھ اشتراک کریں

پیغام بھیجیں
icon تابی لیکس
Latest news
ملتان : میچ کی سٹریجی بہت سادہ سی بنائی ہے کوئی سٹریس نہیں ہے بس کھیلنا ہے اور جیتا ہے، ملتان کوشش کریں گے کہ ہر بال پر رنز بنتے رہیں ، ملتان : گراونڈ کا اپنا پریشر ہوتا ہے مگر اس کو بھلا کر کھیلیں گے ملتان :ملتان کی کنڈیشن سے واقف ہوں اس لئے کھیلنے میں کوئی دقت نہیں ہوگی ملتان : ،ہر میچ ایک نیا مقابلہ ہوتاہے ہم اپنی جیت کےلئے اپنے پلان پرعمل کریںگے ملتان : ملتان میں کھیل کرلطف اندوزہوتارہا ہوں مگر کل گلڈیٹرزکی نمائندگی کرنا ہے ملتان : لاہور میں ہم نے تین میں تین میچ جیتے ہم خوش ہیں مگر ہر دن الگ ہوتا ہے ملتان ہر میچ کے کام کا آغاز صفر سے کرتے ہیں اور جیت پر یقین رکھتے ہیں ملتان ملتان سلطان میری سابقہ ٹیم ہے اس کے خلاف بڑاسکورکرنا ہے ملتان : دراصل بڑے میچ میں بال ٹو بال سٹریجی اختیار کرنا پڑتی ہے ملتان : ملتان کی وکٹ بہت اچھی ہے اس بارے میں تیزی سے فیصلے کرنے پڑیں گے ملتان : اسکواڈ میں بڑی تبدیلی کا امکان نہیں ہے جیتنے والی ٹیم کا مورال بلند ہے ملتان : پی ایس ایل بڑا ٹورنامنٹ ہے بینچ پربیٹھے ہوئے کھلاڑیوں کو مواقع دئیں گے ملتان وکٹ کنڈیشن دیکھتے ہوئے تبدیلیا ں کی جاسکتی ہیں ملتان محمد عامر خاص بالر ہیں جو بالنگ اٹیک کو لیڈ کرتے ہیں ملتان : محمد عامر کو اس لیگ میں خاص مقام حاصل ہے ، کراچی: ایچ بی ایل پاکستان سوپر لیگ سیزن 9 کے لئے کراچی کنگز کے سپلیمنٹری راؤنڈ اور متبادل کھلاڑیوں کے انتخاب کا عمل مکمل۔ کراچی: ایچ بی ایل پی ایس ایل کا ریپلیسمنٹ ڈرافٹ پیر کے روز بذریعہ ویڈیو لنک منعقد ہوا۔ کراچی: کیرون پولارڈ جو کی کراچی کنگز کو پلے آف کے راؤنڈ میں دستیاب نہیں ہوں گے کی جگہ کنگز نے لیگ اسپنر زاہد محمود کو بطور متبادل کھلاڑی منتخب کیا ہے۔ کراچی: نیوزی لینڈ کے ٹِم سائفرٹ کے متبادل کی پِک کو کراچی کنگز نے ریزرو کر لیا ہے۔ کراچی: سائفرٹ اپنی قومی ٹیم کی مصروفیت کے بعد کراچی کنگز کے لئے دستیاب ہوں گے۔ کراچی: کنگز نے سپلیمنٹری راؤنڈ میں جنوبی افریقہ سے تعلق رکھنے والے مڈل آرڈر بلے باز لیوس ڈو پلوی کو ٹیم میں شامل کیا ہے۔ کراچی: اپنی سپلیمنٹری راؤنڈ کی آخری باری میں کراچی کنگز نے 21 سالہ نوجوان کرکٹر محمد روہید کا انتخاب کیا ہے۔ پاکستان کرکٹ ٹیم اپ ڈیٹ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم آکلینڈ سے ہملٹن پہنچ گئی۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دوسرا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل اتوار کو ہملٹن میں کھیلا جائے گا۔ 30 کھلاڑیوں کا اسکلز ڈیولپمنٹ کیمپ 13 جنوری سے ملتان میں شروع ہوگا۔ لاہور 11 جنوری 2024: پاکستان کرکٹ بورڈ کے تحت تیس کھلاڑیوں کا سترہ روزہ اسکلز ڈیولپمنٹ کیمپ ملتان کے انضمام الحق ہائی پرفارمنس سنٹر میں 13 سے 29 جنوری تک منعقد ہوگا۔ منتخب کھلاڑیوں میں حنیف محمد ٹرافی کے ٹاپ پرفارمرز شامل ہیں جو پریذیڈنٹ ٹرافی کا حصہ نہیں ہیں ان کے علاوہ لاڑکانہ ڈیرہ مراد جمالی آزاد جموں و کشمیر ایبٹ آباد بہاولپور اور حیدر آباد کے دور دراز علاقوں سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی بھی شامل ہیں۔ کھلاڑیوں میں 14 بیٹرز 4 اسپنرز 9 پیسر اور تین وکٹ کیپرز شامل ہیں۔ ان کھلاڑیوں کو ایک اچھی تربیت یافتہ کوچنگ سٹاف کی نگرانی میں ترقی اور مہارتوں میں وسیع اضافہ کا موقع فراہم کیا گیا ہے ۔ این سی اے کے ہیڈ کوچ شاہد انور کا کہنا ہے کہ ہم حنیف محمد ٹرافی اور حنیف محمد کپ کے ٹاپ پرفارمرز کو مدنظر رکھتے ہوئے اسکلز کیمپ کا انعقاد کر رہے ہیں یہ کیمپ 2023 ڈومیسٹک سیزن کے دوران کھلاڑیوں کی محنت کا اعتراف ہے۔ ہمارا مقصد ان نوجوان اور باصلاحیت کھلاڑیوں کو عمدہ پروڈکٹس میں پروان چڑھانا ہے جس سے ہماری ڈومیسٹک کرکٹ کا معیار بلند کرنے میں مدد ملے گی اور ہمیں آگے بڑھنے کے لیے معیاری آپشنز ملیں گے۔ کیمپ کے کھلاڑی یہ ہیں۔ بیٹرز - آفاق احمد (ایبٹ آباد ریجن) علی احسن (حیدرآباد ریجن) علی عمران ( اسلام آباد ریجن) انیس اعظم (ایبٹ آباد ریجن) عاشر محمود (سیالکوٹ ریجن) عون شہزاد (بہاولپور ریجن) باسط علی (ڈیرہ مراد جمالی ریجن) حضرت ولی (کوئٹہ ریجن) حسنین شامیر (اے جے کے ریجن) محمد عمار (بہاولپور ریجن) محمد ابراہیم سینئر (کوئٹہ ریجن) محمد ولید (سیالکوٹ ریجن) نوید ملک (اے جے کے ریجن) رضوان محمود ( حیدرآباد ریجن)۔ اسپنرز - اسد ملک (حیدرآباد ریجن) عاشق علی (کراچی ریجن بلیوز) ماجد اصغر (حیدرآباد ریجن) محمد عمیر (بہاولپور ریجن) فاسٹ بولرز - فیضان سلیم (اے جے کے ریجن) حارث حسن (اسلام آباد ریجن) محمد ندیم ( اسلام آباد ریجن) محمد شاہد (ڈیرہ مراد جمالی ریجن) مشتاق احمد (لاڑکانہ ریجن) مصطفی ناصر (حیدرآباد ریجن) نجیب اللہ اچکزئی (کوئٹہ ریجن) ثاقب خان (کراچی ریجن بلیوز) اور شایان خلیل (بہاولپور ریجن) وکٹ کیپرز - حسنین ماجد (بہاولپور ریجن) خیام خان (ایبٹ آباد ریجن) سیف اللہ بنگش (کراچی ریجن بلیوز)۔ سپورٹ اسٹاف - اکرم رضا ( ہیڈ کوچ) غلام علی (اسسٹنٹ کوچ ) شبیر احمد (فاسٹ بولنگ کوچ)، سلیم الٰہی ( فیلڈنگ کوچ) مسعود انوار (اسپن بولنگ کوچ)، محمد طیب ( فزیو تھراپسٹ)، افتخار احمد( اسٹرینتھ اینڈ کنڈیشننگ کوچ) اور محمود محی الدین ( انالسٹ ) پاکستان کرکٹ ٹیم اپ ڈیٹ۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کا اوکلینڈ میں پریکٹس سیشن تمام کھلاڑیوں نے پریکٹس سیشن میں حصہ لیا. پریکٹس سیشن تین گھنٹے تک جاری رہا پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل 12 جنوری کو آکلینڈ میں کھیلا جائے گا۔ لیول 1 کوچنگ کورسز کے شیڈول کا اعلان • پشاور کا اسلامیہ کالج 8 سے 11 جنوری تک چار روزہ لیول 1 کورس کی میزبانی کرے گا • راولپنڈی کا پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم 14 سے 17 جنوری تک لیول 1 کورس کی میزبانی کرے گا • کراچی کا حنیف محمد ہائی پرفارمنس سینٹر 19 سے 22 جنوری تک لیول 1 کورس کی میزبانی کرے گا۔ لاہور، 7 جنوری 2024: سابق ٹیسٹ فاسٹ بولر فضل اکبر ان 30 شرکاء میں شامل ہیں جنہوں نے چار روزہ لیول 1 کرکٹ کوچنگ کورس کے لیے رجسٹریشن کرائی ہے۔ یہ کورس اسلامیہ کالج پشاور میں 8 سے 11 جنوری تک ہوگا۔ دریں اثنا لیول 1 کے دو دیگر کوچنگ کورس اس ماہ کے آخر میں راولپنڈی اور کراچی میں ہونے والے ہیں۔ پنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں 14 سے 17 جنوری لیول 1 کورس ہوگا جبکہ کراچی کا حنیف محمد ہائی پرفارمنس سینٹر 19 سے 22 جنوری تک کوچنگ کورس کی میزبانی کرے گا۔ لیول 1 کورس کے شرکاء کو کوچنگ کی مہارتوں کی بنیادی باتیں سکھائی جائیں گی جن میں کمیونیکیشن، کوچنگ فلسفہ، منصوبہ بندی اور تیاری شامل ہیں۔ پشاور میں یہ کورس ہائی پرفارمنس کوچز شاہد محبوب، محتشم رشید اور تیمور اعظم کرائیں گے۔ کورس کے اختتام پر شرکاء کو اپنے اسائنمنٹس مکمل کرنے کے لیے تین ماہ کا وقت دیا جائے گا۔ کامیاب شرکاء کو لیول 1 کوچنگ سرٹیفکیٹ دیا جائے گا۔ کورس کے شرکاء یہ ہیں : عبدالناصر (پشاور) ابوبکر صدیق (ہنگو) احمد زرین (فاٹا) احمد خان (پشاور) اعزاز علی شاہ (پشاور) عالمگیر (فاٹا) فضل اکبر درانی ( پشاور) ہمایوں خان (فاٹا) حسین خان (پشاور) افتخار احمد (فاٹا) اعجاز احمد (ایبٹ آباد) امتیاز حسین (پشاور) مامون خان (پشاور) معراج علی (پشاور) محمد اسماعیل (پشاور) محمد حماد (پشاور) محمد حارث (پشاور) محمد عمران (پشاور) محمد نبی (پشاور) محمد ریاض (پشاور) محمد عثمان (نوشہرہ) محمد عثمان (پشاور) محمد عثمان وزیر (پشاور) مجیب الرحمان (فاٹا) روئل شاکر اللہ (ایبٹ آباد) سید محمد ظفر (ایبٹ آباد) شرافت شاہ شاہین (پشاور) تاج ولی (پشاور) واحد علی (ایبٹ آباد) اور زبیر علی (پشاور) -ENDS- کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان کی کھلاڑیوں کے ہمراہ پریس کانفرنس ہم دوبار ایشئین چیمپئن بنے،کپتان محمد ذیشان افغانستان کی ویل چیئر ٹیم بہت جلد پاکستان کا دورہ کرے گی،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان افغانستان کے 16 کھلاڑی اور پانچ آفیشلز پاکستان آ رہے ہیں،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان افغانستان کی ٹیم پہلی بار ہمارے ساتھ ویل چیئر ون ڈے میچ کھیلے گیکپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان آج پاکستان میں 450 سے زائد ویک چیئر کھلاڑی ہیں،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان تمام صوبائی حکومتوں نے ویل چیئر کرکٹ کو بھر پور سپورٹ کیا،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان وزیر اعلی پنجاب کی سرپرستی کی ضرورت ہے ہمیں،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان کور کمانڈر لاہور نے ہماری ٹیم کو اون کیا اور ہمیں عزت دی،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان ہم چاہتے ہیں کہ تمام ملک میں ویل چیئر کرکٹ کو فروغ ملے،کپتان ویل چیئر کرکٹ ٹیم محمد ذیشان پاکستان انڈر 19 ٹیم کا ورلڈ کپ کی تیاریوں کے لیے کیمپ لاہورمیں جاری کل دوپہر دو بجے ہیڈ کوچ محمد یوسف پریس کانفرنس ہال فار اینڈ بلڈنگ قذافی اسٹیڈیم لاہور میں پریس کانفرنس کریں گے۔ آج کیمپ کے چھٹے روز کھلاڑیوں نے قذافی اسٹیڈیم لاہورمیں سینیریو میچ کھیلا۔ پاکستان انڈر19 ٹیم کل دوپہر 12 بجے نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں جم سیشن اور فٹنس سیشن کرے گی جس کے بعد کھلاڑی بیٹنگ اور بولنگ سیشن میں حصہ لیں گے۔ پانچ جنوری بروز جمعہ کو پاکستان انڈر 19 ٹیم کے چار کھلاڑی دوپہر 3 بجے پریس کانفرنس ہال فار اینڈ بلڈنگ میں میڈیا مکس زون میں حصہ لیں گے۔ ہفتے کے روز کپتان سعد بیگ دوپہر 12 بجے پریس کانفرنس ہال فار اینڈ بلڈنگ قدافی اسٹیڈیم لاہور میں روانگی سے قبل پریس کانفرنس کریں گے۔ پاکستان انڈر 19 ٹیم چھ جنوری کی رات لاہور سے براستہ دبئی جنوبی افریقہ کے لیے روانہ ہوگی۔ لیگ اسپنر ابرار احمد مکمل فٹ نہ ہونے کی وجہ سے نیوزی لینڈ کے خلاف پانچ میچوں کی ٹی ٹوئنٹی سیریز میں حصہ نہیں لے پائیں گے۔ وہ وطن واپس جارہے ہیں جہاں نیشنل کرکٹ اکیڈمی میں ان کا ری ہیب جاری رہے گا۔ لیفٹ آرم اسپنر محمد نواز کو ٹیسٹ اسکواڈ سے ریلیز کردیا گیا ہے اور انہوں نے دیگر تین کھلاڑیوں زمان خان ۔ حارث رؤف اور اسامہ میر کے ساتھ ٹی ٹوئنٹی سیریز کی تیاری کا آغاز کردیا ہے۔ یہ چاروں کھلاڑی پانچ جنوری کو آسٹریلیا سے آکلینڈ پہنچ کر ٹی ٹوئنٹی اسکواڈ میں شامل دیگر کھلاڑیوں کے ساتھ سیریز کی پریکٹس شروع کردیں گے۔ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان پہلا ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل 12 جنوری کو آکلینڈ میں کھیلا جائے گا۔ پاکستان کرکٹ ٹیم کے لاہور میں جاری کیمپ کا آج آخری روز ہے۔ ٹی ٹوئنٹی اسکواڈ میں شامل چھ کھلاڑی اعظم خان، حسیب اللہ خان، عباس آفریدی، فخر زمان، افتخار احمد اور صاحبزادہ فرحان آج بارہ بجے سے قذافی اسٹیڈیم میں ٹریننگ سیشن میں حصہ لیں گے۔ محمد حسنین بھی ٹریننگ سیشن میں حصہ لیں گے۔ کیمپ کے اختتام پر دوپہر 130 پر کیمپ کمانڈنٹ یاسر عرفات میڈیا ٹاک کریں گے۔ پاکستان ٹیم کل رات لاہور سے براستہ دبئی آکلینڈ روانہ ہوگی۔

عدم برداشت، وجوہات اور حل

عدم برداشت، وجوہات اور حل
آفتاب تابی
آفتاب تابی
پچھلے دنوں کہیں پڑھا کہ ماہر عمرانیات کے مطابق ہمارے معاشرے کے نوے فیصد جرائم و بدامنی کی وجہ عدم برداشت ہے۔
صبح سے شام تک گھروں دفاتر میدانوں چوراہوں سڑکوں مساجد بازار اور سوشل میڈیا تک اگر آپ بغور مشاہدہ کریں تو آپکو اکثرئیت میں رواداری کا فقدان اور خود غرضی کی کثرت ملے گی۔لوگو پر تھوڑا غور کریں تو وہاں چہروں پر کرختگی اور لہجوں میں تلخی واضح ملے گی۔تعمیر کے بجائے تخریب ہمارے اندر رچ بس گئی ہے۔

اخلاق کی بنیادیں خندہ پیشانی مسکراہٹیں بردباری میانہ روی ملنساری صبر و تحمل احترام ادب جیسی خوبیاں ہم لوگوں میں ڈھونڈے نہیں ملتیں۔عدل و انصاف جسکا قرآن پاک میں حکم دیا گیا ہمارا اس سے واسطہ ہی نہیں۔
جب یہ سب اوصاف معاشرے سے ختم ہوں گے تو ان کی جگہ غصہ عدم برداشت شدت پسندی جارحانہ پن اور لاقانونیت پھلے پھولے گی

تضحیک بھونڈے مزاق دل آزاری طعنے تہمت ہمارے معاشرے کا خاصہ بن چکی ہیں
اپنے پیارے آقا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی سنت کو نظر انداز کرتے ہوئے پتھر کا جواب مسکراہٹ برداشت سے دینے کے بجائے اینٹ سے دینا اپنا فرض سمجھتے ہیں۔
ہمیں کوئی ایک سنائے تو اسکو دو سنائے بغیر تو ہمیں چین ہی نہیں ملتا بھلے وہ کوئی اجنبی ہو یا اپنا قریبی ہو۔لوگ معمولی باتوں پر ہوش و حواس کھو دیتے ہیں اور دوسرے کو جان سے مارنے تک آ جاتے ہیں۔
ہم انسانیت کو سامنے رکھنے کے بجائے رنگ نسل مسلک قومیت صوبائیت کو بنیاد بنا کر عدم برداشت کا رویہ اپنا کر معاشرے میں نفرت کی فصل کو پروان چڑھا رہے ہیں۔
عدم برداشت ہماری زندگیوں میں خود غرضی خودپسندی اور غرور کی وجہ سے زیادہ تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ہماری نظر میں ہم خود ہمارا نظریہ ہماری سوچ ہماری رائےاور ہمارا عقیدہ ہی برتر اور درست ہے۔ہم یہ چاہتے ہیں کہ دوسرا شخص وہی سوچے جو ہم سوچ رہے ہیں۔یہ کیسے ممکن ہے؟ہر انسان کی فطرت سوچ سمجھنے کی صلاحیت پسند نا پسند مختلف ہوتی ہے۔ہم ایک ہی وقت میں وکیل گواہ اور منصف بن جاتے ہیں
آئے روز سوشل میڈیا پر کسی بھی سیاسی مزہبی پوسٹ پر لوگ ایک دوسرے کی رائےکو پاوں تلے روند کر اپنے خیالات کی پگ اونچی کرنے کو بےتاب نظر آتے ہیں۔اس کام میں وہ گالم گلوچ اور نفرت آمیز الفاظ استعمال کرنا اپنی زہانت سمجھتے ہیں۔

اگر ہم معاشرتی و اجتماعی سطح پر عدم برداشت کا حل چاہتے ہیں تو ہمیں چاہیے کہ دوسروں کو سنیں۔ کسی کے طعن و تشنیع کا جواب مسکراہٹ یا خاموشی سے دیں۔جو خوبیاں آپ سمجھتے ہیں کہ آپ میں ہیں ان کی دوسروں کی ذات میں بھی موجود ہونے پر توقع و یقین کریں

دوسروں کی رائے کا احترام کریں، بحث، اور جارحانہ رویے اختیار کرنے کے بجائے فراخ دلی کا مظاہرہ کریں۔تنقید برائے اصلاح کریں اگر کسی کو قائل کرنا ہے تو غصے کے بجائے دلائل کا سہارا لیں۔ دوسروں کے حقوق کا خیال رکھیں بڑے چھوٹے کی تمیز رکھیں ریاستی قوانین کی پابندی کریں ہر بات کے مثبت اور منفی دونوں پہلوؤں کو جانچیں اور اس کے بعد ہی کوئی نتیجہ اخذ کریں تو یقیناً آہستہ آہستہ معاشرہ بہتری کی جانب گامزن ہو گا۔
ورنہ معاشرے کا یہ بگاڑ ملک قوم معاشرے کے زوال و تباہی کا باعث بنے گا

adds

اپنی رائے کا اظہار کریں

adds

متعلقہ خبریں