More share buttons
اپنے دوستوں کے ساتھ اشتراک کریں

پیغام بھیجیں
icon تابی لیکس
Latest news
ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں شعیب ملک نے تمام پاکستانی کھلاڑیوں کو پیچھے چھوڑ دیا نیشنل ٹی ٹونٹی کپ میں ناقص کارکردگی عمران فرحت کو بلوچستان ٹیم سے ڈراپ کردیا گیا سدرن پنجاب سے بلاول بھٹی، محمد عرفان اور راحت علی ڈراپ دلبر حسین، محمد عمران اور زین عباس کو اسکواڈ میں شامل آف اسپنر بلال آصف سنٹرل پنجاب سے ڈراپ عبدالواحد سمیت پانچ کھلاڑیوں کو سیکنڈ الیون نیشنل ٹی ٹونٹی کپ میں عمدہ کارکردگی کا صلہ مل گیا کوئٹہ کے سترہ سالہ کرکٹر کو عمران فرحت کی جگہ بلوچستان فرسٹ الیون میں شامل کرلیا گیا نوجوان بیٹسمین محمد اخلاق بھی سنٹرل پنجاب کے بلال آصف کی جگہ اسکواڈ میں شامل سدرن پنجاب نے راحت علی، محمد عرفان اور بلاول بھٹی کی جگہ زین عباس، دلبر حسین اور محمد عمران کو راولپنڈی طلب کرلیا قومی کرکٹ کو سدھارنے کے نسخے تیار ہونے لگے گرانٹ بریڈ برن نے اپنی پریزینٹیشن میں کوچز کو ان کی ذمہ داریوں سے آگاہ کیا اوپنر احمد شہزاد نے جم ورک اور رننگ کے بعد اب بیٹنگ ٹریننگ کا بھی آغاز کردیا قومی ٹیم کی مصروفیات؛ بنگلادیشں سے ملتوی ٹیسٹ رواں سیزن میں نہیں ہوسکے گا نیوزی لینڈ اور پاکستان کے درمیان سیریز کے شیڈول کا اعلان پاکستان کرکٹ ٹیم دسمبر اور جنوری میں نیوزی لینڈ میں 3 ٹی ٹوئنٹی اور 2 ٹیسٹ میچ کھیلے گی بریکنگ ۔۔ بریکنگ ۔۔ پاکستان کرکٹ بورڈ ایک اور مشکل ميں پڑگيا ڈپارٹمنٹ کرکٹ کیوں بحال نہیں کی ؟ کرکٹ کميٹی کے سربراہ اقبال قاسم بورڈ پر برہم ، ذرائع کرکٹ کميٹی سربراہ بورڈ سے ناراض ، کام کرنے سے انکار کردیا ، ذرائع عہدہ چھوڑ رہا ہوں ، اقبال قاسم نے بورڈ کو آگاہ کرديا ، ذرائع اقبال قاسم کا چيئرمين احسان مانی سے رابطہ نہ ہوسکا ، ذرائع کرکٹ کميٹی کے چيئرمين نے ذاکر خان کو فون پر مطلع کيا اقبال قاسم نے کام جاری نہ رکھنے کی ای ميل بورڈ کو کردی ہم اس سے زیادہ سکور کرسکتے تھے، یونس خان لاہور: وکٹیں ہماری ہاتھ میں تھی 200 سے زیادہ سکور ہوتا تو بہت اچھا تھا، یونس خان لاہور: انگلینڈ نے بہترین بلے بازی کی، یونس خان لاہور: ہمارے باولر انڈر پریشر آگئے، یونس خان لاہور: اظہر نروس ہوتے تھے کہ میری ٹانگ پر گیند نہ لگے، یونس خان لاہور: میں نے صرف ان کا ٹاپ ہینڈ درست کروایا، یونس خان لاہور: کوچنگ میں یہ ضروری ہوتا ک کھلاڑی آپ پر بھروسہ کرے، یونس خان لاہور: میں نے اظہر کو سمجھایا، اس نے عملدرآمد کیا، یونس خان لاہور: بابراعظم کافی عرصہ سے کپتانی کررہا ہے، یونس خان لاہور: ڈریسنگ روم میں ہرکوئی اپنی اپنی آراں دیتا ہے، یونس خان لاہور: کپتان کو اپنے اوپر اعتماد ہونا چاہیے، یونس خان لاہور: کپتان کو اپنے فیصلے خود کرنے چاہیے، یونس خان لاہور: ڈرنا نہیں چاہیے، فیصلے غلط بھی ہوجائے تو کوئی بات نہیں، یونس خان لاہور: ڈائری ہمیشہ اپنے ساتھ رکھتا ہوں، یونس خان لاہور: اپنے آپ کو مصروف رکھنے کیلئے ڈائری لکھتا ہوں، یونس خان لاہور: میں نے اپنے آپ کو کافی تبدیل کیا ہے، یونس خان لاہور: محمد حفیظ کے ساتھ بہت کام کیا ہے، یونس خان لاہور: گالف کھیلتے وقت بھی اسکو ایڈوائز کرتا رہا، یونس خان لاہور: میں تو یاسر شاہ کے بال بھی بناتا رہا ، یونس خان لاہور: مرحوم کوچ باب وولمر میرے ساتھ ایسا کرتے تھے، یونس خان لاہور: باب وولمر میرے لیے باپ جیسے تھے، یونس خان لاہور: کھلاڑیوں کے ساتھ گھل مل جانے سے آپ اسکی خامیوں پر کام کرسکتے ہیں، یونس خان

پی سی بی کوویڈ19 کے پروٹوکولز جاری، کوچز اور کھلاڑیوں کے ڈوپ ٹیسٹ بھی ہوجاتے تو اچھا تھا

پی سی بی  کوویڈ19 کے پروٹوکولز جاری، کوچز اور کھلاڑیوں کے ڈوپ ٹیسٹ بھی ہوجاتے تو اچھا تھا

• فرسٹ اور سیکنڈ الیون میں شامل کھلاڑیوں کی دوسری کوویڈ 19 ٹیسٹنگ بالتریب 18 اور 21 ستمبر کو ہوگی
• کھلاڑی، اسپورٹ اسٹاف، میچ ریفریز، امپائرز، ڈیوٹی ڈاکٹرز، سیکورٹی منیجرز اور بس ڈرائیورز بائیو سیکیور ببل میں رہیں گے
• گراؤنڈ اسٹاف، وینیو منیجرز، اسکوررز اور دیگر عہدیداران کو بائیو سیکیور زون کی دوسری تہہ میں رکھا جائے گا
• کھلاڑیوں کی تفریحی کے لیے ایک کمرہ مختص ہوگا، جہاں ٹی وی، وائی فائے اور کیریم بورڈ کی سہولت موجود ہوگی
• بائیو سیکیور ببل توڑنے والےفرد کو 5 روز(میں 2 کوویڈ 19 ٹیسٹ منفی آنے) تک سیلف آئسولیشن میں رہنا ہوگا
• پی سی بی نے نیشنل ٹی ٹونٹی کپ اور قائداعظم ٹرافی کرکٹ ٹورنامنٹس کے لیے میڈیا پروٹوکولز کا بھی اعلان کردیا

لاہور، 15 ستمبر 2020ء:

پاکستان کرکٹ کرکٹ بورڈ نے کورونا وائرس کے باعث موجودہ صورتحال میں کرکٹ کی سرگرمیوں کو محفوظ انداز میں شروع کرنے کی غرض سے ڈومیسٹک کرکٹ سیزن 21-2020 کے لیے کوویڈ 19 پروٹوکولز کا اعلان کردیا ہے۔ ان پروٹوکولز کے اعلان کا مقصد سیزن کے دوران اپنے کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کی صحت اور حفاظت کو یقینی بنانا ہے۔

کھلاڑی، اسپورٹ اسٹاف، میچ آفیشلزاور ڈیوٹی ڈاکٹرزسیزن کے آغاز سے ہی بائیو سیکیور ببل میں رہیں گے۔ اس دوران انہیں آپس میں ملنے جلنے کی مکمل آزادی ہوگی تاہم ببل میں داخلے کے لیے ان تمام کھلاڑیوں، اسپورٹ اسٹاف، میچ آفیشلز اور ڈیوٹی ڈاکٹرز کے مسلسل 2 مرتبہ کوویڈ 19 ٹیسٹ منفی آنا لازمی ہوں گے، یہ فیصلہ، ببل کو وائرس فری رکھنے کی غرض سے کیا گیا ہے۔

فرسٹ اور سیکنڈ الیون میں شامل تمام ٹیموں کے کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف کو پیر کو کروائے گئے اپنے پہلے کوویڈ 19 ٹیسٹ کی رپورٹس بالترتیب 16 اور 18 ستمبرکو جمع کرانی ہیں۔پی سی بی ان تمام افراد کو اس ٹیسٹ کے واجبات بعد میں ادا کردے گا۔

اسکواڈ میں شامل جن کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف کے پہلے کوویڈ 19 ٹیسٹ کی رپورٹ منفی آئے گی انہیں پی سی بی کے قائم کردہ سنٹرل اسٹیشن بلایا جائے گا۔ جہاں ان کی دوسری کوویڈ 19 ٹیسٹنگ پی سی بی میڈیکل ٹیم کی زیرنگرانی ہوگی۔ فرسٹ الیون کے اسکواڈز کی دوسری کوویڈ 19 ٹیسٹنگ 18ستمبرجبکہ سکینڈ الیون کی 21 ستمبر کو ہوگی۔

کھلاڑیوں اور اسپورٹ اسٹاف کو سنٹرل اسٹیشنز پہنچنے کے لیےہوائی سفر کے علاوہ پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ جہاں انہیں داخلے سے قبل ان کے سامان کے ہمراہ ڈس انفیکٹ کیا جائے گا۔اس دوران ہر فرد کو علیحدہ علیحدہ کمروں میں رہائش دی جائے گی۔

اگر کسی شخص کا دوسرا ٹیسٹ مثبت آجاتا ہے تو اسے 5 روز کے لیے آئسولیٹ کردیا جائے گا، اس دوران اس کےمزید 2 ٹیسٹ کروائے جائیں گے۔ اگر یہ ٹیسٹ بھی مثبت آجائیں تو اس شخص کو 14 روز تک سیلف آئسولیشن میں بھجوادیا جائے۔ جس کے بعد اس فرد کو مسلسل 2 ٹیسٹ منفی آنے کی صورت میں بائیو سیکیور زون میں داخلے کی اجازت ہوگی۔

دورہ انگلینڈ سے واپس آنے والے کرکٹرز کو 25 ستمبر تک اپنی ٹیموں کو جوائن کرنے کی چھوٹ دی گئی ہے۔ دس ہفتوں پر مشتمل انگلینڈ کے طویل دورے کے بعد ان کھلاڑیوں کو اپنی فیملی کے ساتھ وقت گزارنے کی اجازت دی گئی ہے۔

اسی طرح،ان ایونٹس کے لیے مقررہ میچ آفیشلز کو اپنی پہلی کوویڈ19 ٹیسٹنگ کے نتائج 24 ستمبر تک جمع کرانے ہوں گےجبکہ ان کے دوسرے ٹیسٹ 27 ستمبر کو پی سی بی کے سنٹرل اسٹیشنز میں ہوں گے۔

نوجوان کھلاڑیوں کی سہولت اور آسانی کے لئے پاکستان کرکٹ بورڈ نے انڈر19 کھلاڑیوں کے کوویڈ19 ٹیسٹ کی مکمل ذمہ داری خود اٹھانے کا اعلان کیا ہے۔ تمام ایسوسی ایشنز کی انڈر19 ٹیموں کی کوویڈ19 ٹیسٹنگ کا آغاز یکم اکتوبر سے ہوگا۔

پی سی بی کو اندازہ ہے کہ ملک بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال بدل رہی ہے، لہٰذا پی سی بی اس سلسلے میں ڈومیسٹک سیزن 21-2020 میں متوقع چیلنجز سے نمٹنے اور رسک کو کم سے کم کرنے کی غرض سے اپنی طرف سے ہر ممکن اقدامات اٹھانےکی کوشش کررہاہے۔

بائیو سیکیور زون:

ہوٹل کے کمرے، کھانے کی جگہ، انڈور گیمز روم، کھیلنے کی جگہ، ڈریسنگ رومز، میچ آفیشلز کے کمرے،ٹیموں کی بسیں اور گاڑیاں بائیو سیکیور زون میں شامل ہوں گی، جسے متواتر ڈس انفیکٹ کیا جاتا رہے گا۔پرٹوکولز کے مطابق بائیو سیکیور زون کی پہلی تہہ میں موجود افرادکی تفریحی کی غرض سے ہر ٹیم کے لیے ایک الگ کمرہ مختص ہوگا ، جس میں وائی فائے سروس، ٹی وی اور کیریم بورڈ کی سہولت موجود ہوگی۔

ڈومیسٹک سیزن کے دوران کوویڈ19 کے ان پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کروانے کی ذمہ داری امپلیمنٹیشن ٹیم کی ذمہ داری ہوگی، جس کی سربراہی کوویڈ19 میڈیکل آفیسر ڈاکٹر ریاض کے سپرد کی گئی ہے۔ اس ٹیم کے دیگر اراکین میں ٹیم منیجرز سمیت فزیوتھراپسٹ ، لائزن آفیسرز اوور ڈیوٹی ڈاکٹرز شامل ہوں گے۔

بائیوسیکیور زون کی پہلی تہہ میں موجود افراد کو ضرورت پڑنے پر دوسری تہہ میں جانے کے لیے اپنے چہروں کو ماسک سے ڈھانپنے کے علاوہ دوسری تہہ کے افراد سے 10 سے 15 فٹ کا فاصلہ رکھنا ہوگا۔بائیو سیکیور زون کی دوسری تہہ میں گراؤنڈ اسٹاف، وینیو منیجرز، اسکوررز اور دیگر منتظمین رہیں گے۔ دونوں تہوں میں رہنے والے افراد آپس میں رابطے کے لیے موبائل فون کا استعمال کریں گے۔ میچ دوران کھلاڑیوں کو ڈریسنگ روم کے باہر بیٹھنے کی ترغیب دی جائے گی۔ اس دوران دوپہرکے کھانے یا چائے کےوفقے کے دوران سماجی فاصلےسے متعلق ہدایات پر عمل کیا جائے گا۔

بائیو سیکیور ببل توڑنے والے شخص کو 5 روز (کوویڈ19 کے 2 منفی ٹیسٹ آنے) تک سیلف آئسولیشن میں رہنا ہوگا۔

میڈیا پروٹوکولز:

ان غیرمعمولی حالات میں شیڈول ڈومیسٹک کرکٹ سیزن 21-2020 میں شریک تمام افراد کی صحت اور حفاظت کو پیش نظر رکھتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ نے اپنے میڈیا پروٹوکولز کا اعلان بھی کردیا ہے۔

یہ کچھ بنیادی پروٹوکولز ہیں تاہم کوویڈ19 کی بدلتی صورتحال کے باعث ان پروٹوکولز میں آخری وقت پر تبدیلی کی جاسکے گی ۔

adds

اپنی رائے کا اظہار کریں